npodu

Hamesha Jeet Ky Jana Kamal Thori Hey | Urdu Poetry

yeh aankh rony ki shiddat sey laal thori hey
malal hey magar itna malal thori hey
bas apny wasty fikr mand hen sab log
yahan kisi ko kisi ka khayal thori hey
paro ko kat diya hey uraan sey pehly
yeh khof-e-hijr hey shoq-e-wisal thori hey
maza to tab hey jo haar ker b hansty raho
hamesha jeet k jana kamal thori hey

یہ آنکھ رونے کی شدّت سے لال تھوڑی ہے
ملال ہے مگر اتنا ملال تھوڑی ہے

بس اپنے واسطے فِکر مندہیں سب لوگ
یہاں کسی کو کسی کا خیال تھوڑی ہے

پروں کو کاٹ دیا ہے،اُڑان سے پہلے
یہ خوفِ ہجر ہے،شوقِ وصال تھوڑی ہے

مزہ تو تب ہےجو ہار کر بھی ہنستے رہو
ہمیشہ جیت کے جانا کمال تھوڑی ہے

More Ghazals on npodu:

Love Urdu Poetry/ Ghazals by Mustafa Kamal

Muhabbat Ki Nagri | Urdu Ghazal by Mustafa Kamaal

Akmal Ameer Gohar

1 comment

Your Header Sidebar area is currently empty. Hurry up and add some widgets.